بریکنگ نیوز
پاکستانی چاول کی درآمد پر ٹیکس چھوٹ کا فیصلہ خوش آئند ہے، صدر آذربائیجان قطر: دوحہ کے قریب زیر تعمیر عمارت میں آگ لگ گئی بھارت میں ہندو لڑکی کے ساتھ سفر کرنے والے مسلمان لڑکے پر تشدد بھارت، چاندنی چوک کی مارکیٹ میں خوفناک آتشزدگی، تین عمارتیں گر گئیں ’باکو‘ کی توہین کیوں کی، آذربائیجان نے آرمینیا سے مذاکرات منسوخ کر دیئے مسجد نبویﷺ کے صحن میں بچی کی ولادت انتہا پسند ہندوؤں کے ہاتھوں مسلم نوجوان کا قتل، راجھستان میں حالات کشیدہ گوداموں میں رکھی 500 کلو چرس چوہوں نے کھا لی، بھارتی پولیس کا الزام نئی دہلی کی تاریخی جامع مسجد میں خواتین کے داخلے پر عائد پابندی ختم چین میں رواں ہفتے آتشزدگی کا دوسرا بڑا واقعہ، 10 افراد ہلاک انڈونیشیا، زلزلے کے دو دن بعد ملبے سے زندہ بچے کو نکال لیا گیا چین، سخت پابندیوں کے باوجود ملک بھر میں کورونا کے ریکارڈ کیسز انور ابراہیم نے ملائیشیا کے وزیر اعظم کا حلف اٹھا لیا سعودی عرب: جدہ میں طوفانی بارش سے صحرائی وادیاں زیر آب آگئیں امریکی گلوکار ڈونلڈ ٹرمپ کے ٹوئٹر اکاؤنٹ کی بحالی پر سراپا احتجاج سعودی عرب، نور فیسٹیول کا اختتام، چھ گنیز ورلڈ ریکارڈ قائم جنوبی افریقہ، جرائم کی شرح میں خطرناک اضافہ، تین ماہ 7 ہزار قتل برسلز میں کشمیر ای یو ویک کی تقریبات ختم امریکہ، شاپنگ مال میں شہریوں پر گولیوں کی برسات، 6 افراد ہلاک وہیل نما کارگو جہاز کی پہلی مرتبہ ایشیا میں لینڈنگ، شہری حیرت زدہ یورپی پارلیمنٹ نے روس کو دہشت گردی کی سرپرست ریاست قرار دے دیا آئی فون کی سب سے بڑی فیکٹری کے ملازمین کا احتجاج، ویڈیو وائرل سال 2023 میں کون سی بڑی تباہی ہوگی؟ دنیا کے بڑے سانحات کی درست پیشگوئی کرنے والی ماہر نجومی نے خبردا... رواں سال ایلون مسک کی دولت میں بڑی کمی مقبوضہ کشمیر؛ بانڈی پورہ سے خاتون سمیت چار کشمیری گرفتار

سال 2023 میں کون سی بڑی تباہی ہوگی؟ دنیا کے بڑے سانحات کی درست پیشگوئی کرنے والی ماہر نجومی نے خبردار کردیا

سال 2022  اب تک گزشتہ دو سالوں 2020 اور 2021 کی نسبت کافی بہتر رہا  ہے تاہم رواں برس روس یوکرین جنگ سمیت  گلوبل وارمنگ کے شدید اثرات  پوری دنیا پہ اثر انداز ہوئےہیں۔

نئے سال کے آغاز سے سب کو یہی توقع  ہوتی ہے کہ گذشتہ سال کے مقابلے  میں انہیں اس سال زیادہ خوشیاں ملیں اور کوئی مشکل مرحلہ نہ آئے بلکہ زندگی میں آسائشات کی بھرمار ہو۔

تاہم 2023 سے متعلق   چند دل دہلا دینے والی پیشگوئیاں  سامنے آئی ہیں جس سے لگتا ہے کہ  دنیا کو 2020 اور 2021  سے زیادہ مشکلات و تباہی کا  سامنا  کرنا پڑسکتا ہے۔

1996 میں انتقال کرنجانے والی بابا وانگا کے نام سے مشہور بلغاریہ کی آنجہانی نجومی خاتون نے دنیا سے متعلق کئی تباہ کن پیشگوئیاں کی تھیں  جن میں سے  کئی پوری ہوچکی ہیں۔

بابا وانگا کی سال 2022 سے متعلق کی گئی چھ  میں سے چار پیشگوئیاں پوری ہوچکی ہیں۔

ان کی سب سے مشہور  پیشگوئیوں میں 11 ستمبر 2001 کو نیویارک میں ورلڈ ٹریڈ سینٹر پر حملہ، چرنوبل جوہری حادثہ، شہزادی ڈیانا کی موت، 2004 کا سونامی اور یورپی یونین سے برطانیہ کا اخراج شامل ہیں تاہم اس کے علاوہ ان کی بعض پیش گوئیاں غلط بھی ثابت ہوئیں۔

سال 2023 سے متعلق  بھی بابا وانگا   نے کچھ تباہ کن پیشگوئیاں   کی تھیں جو اگر پوری ہوگئیں تو کرہ ارض پر زندگی انتہائی مشکل ہوجائے گی۔

بابا وانگا  نے پیشگوئی  کی ہے کہ 2023 میں زمین کے مدار میں تبدیلی کا سب سے بڑا فلکیاتی حادثہ پیش آسکتا ہے جس سے  زمین پر کئی ایسی تبدیلیاں رونما ہو سکتی ہیں جن کے اثرات تباہ کن ہو ں گے۔

فلکیاتی تبدیلی سے دنیا کو شمسی طوفان کا سامنا بھی کرنا پڑسکتا ہے   جس کی وجہ سے دنیا بھر کی فضاء میں تابکاری کی سطح بلند ہو گی۔

اس کے علاوہ انہوں نے 2023 میں خلائی مخلوق کے دنیا پر حملے کی بھی پیشگوئی کی ہے جس میں لاکھوں افراد  ہلاک ہوسکتے ہیں۔

بابا وانگا نے دنیا کے چند سپر پاور ممالک میں سے ایک کے حیاتیاتی ہتھیاروں کے استعمال کے باعث بڑے پیمانے پر ہلاکتوں کی پیشگوئی بھی کی ہے۔

بابا وانگا کی اس پیشگوئی کو تیسری عالمی جنگ کا پیش خیمہ سمجھے جانے والے حالیہ روس  یوکرین تنازع کی وجہ سے بالکل بھی نظر انداز نہیں کیا جا سکتا۔

بابا وانگا نے آئندہ آنے والے سالوں کے لیے بھی بڑی پیشگوئیاں کی ہیں  جن میں سے ایک بڑی پیشگوئی 2028 میں انسان کے وینس پر پہنچنے کی  ہے۔

انہوں نے سال 5079 کو دنیا کے خاتمے  کا سال قرار دیا ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں