بریکنگ نیوز
بارش کے بعد مرتضیٰ وہاب کا رات گئے شہر کا دورہ پولیس کی مبینہ ملی بھگت سے شہر میں غنڈہ گردی میں اضافہ امریکہ، فائرنگ کے واقعات نہ تھم سکے، آزادی پریڈ میں فائرنگ سے 6 افراد ہلاک شاہدرہ؛ گلشن حیات پارک میں قتل کی واردات، ملزمان موقع سے فرار آئی جی پنجاب کی جانب سے پابندی کے باوجود پولیس ٹک ٹاک بنانے میں مصروف حیدرآباد؛ شہر کے مختلف علاقوں میں بارش کے بعد اب تک بجلی بحال نا ہو سکی امریکہ، فائرنگ کے واقعات نہ تھم سکے، آزادی پریڈ میں فائرنگ سے 6 افراد ہلاک اٹلی، برفانی تودہ گرنے سے 6 افراد ہلاک، متعدد زخمی عوام میں کورونا سے متعلق مزید شعور بیدار کرنے کی ضرورت ہے، وزیر صحت پیوٹن کا امریکہ کو یومِ آزادی پر مبارکباد نہ دینے کا فیصلہ پنجاب کی ترقی کے دشمن کا نام عمران خان ہے، مریم نواز عازمینِ حج کے لیے دنیا کا سب سے بڑا کولنگ سسٹم نصب کردیا گیا سعودی عرب، غلاف کعبہ یکم محرم کو تبدیل کرنے کا فیصلہ سعودی عرب، غلاف کعبہ یکم محرم کو تبدیل کرنے کا فیصلہ ایندھن کی عدم دستیابی کے سبب سری لنکا میں ایک بار پھر اسکولز بند لوٹوں کی چیف پولنگ ایجنٹ مریم صفدر کا پورا زور بیہودگی پر لگ رہا ہے، فواد چوہدری ازبکستان، خود مختار صوبے میں ہنگامے پھوٹ پڑے، 18 افراد ہلاک عازمینِ حج کے لیے دنیا کا سب سے بڑا کولنگ سسٹم نصب کردیا گیا موسمیاتی تبدیلیاں نئی وباؤں کا پیش خیمہ ثابت ہوسکتی ہیں، سائنسدانوں کا انتباہ بارش کی پہلی بوند گرتے ہی شہر اندھیرے میں ڈوب گیا ’بجلی کے ریٹس بہت زیادہ ہیں اور گیس کی قلت کا بھی سامنا ہے‘ ’’دعا زہرہ کے بیانات غلط ثابت ہوئے اور یہ کیس اغوا کے ضمرے میں آتا ہے‘ صوبائی وزیر صحت کی واسا ہیڈ آفس آمد، واٹر سپلائی کے ترقیاتی منصوبوں پر تبادلہ خیال نیب میں تقرری و تبادلے منسوخ کرنے کی ہدایات جاری وزیراعلیٰ بلوچستان کا صوبے کے دیگر علاقوں میں طوفانی بارش سے پیدا صورتحال کا جائزہ

روس نے یوکرین میں وہی کیا جو جرمنی نے سوویت روس کیساتھ کیا تھا، زیلنسکی

یوکرین کے صدر ولودیمیر زیلنسکی نے گزشتہ روز دوسری عالمی جنگ کی برسی کے موقع پر قوم سے خطاب میں کہا کہ روس نے 24 فروری کو یوکرین پر حملہ کرکے وہی کیا جو نازی جرمنی نے 22 جون 1941ء کو سوویت روس پر حملے کے بعد کیا تھا تاہم اس وقت جارح کو شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

صدر زیلنسکی نے کہا کہ آج یوم سوگ ہے اور جنگ کے متاثرین کو یاد کرنے کا دن ہے۔ بیسویں صدی میں لڑی جانے والی ایک ایسی جنگ جسے تاریخ میں ہمیشہ یاد رکھا جانا چاہیے تھا اور جسے کبھی دہرایا نہیں جانا چاہیے تھا لیکن اسے دہرایا گیا۔ یوکرینی صدر نے عوام سے کہا کہ ہمیں اپنے وطن کو ہر حال میں آزاد کرانا ہے اور جلد فتح حاصل کرنی ہے یہ ہمارا قومی ہدف ہے جس کے لیے ریاست کو ہی نہیں بلکہ ہر شہری کو، ہر ممکن سطح پر کام کرنا ہوگا۔

روس میں بھی گزشتہ روز جنگِ عظیم دوم کے 81 برس مکمل ہونے پر کئی پروگراموں کا انعقاد کیا گیا۔ روسی صدر ولادیمیر پیوٹن نے کریملن کی دیوار پر نامعلوم فوجیوں کی یادگار پر پھول رکھے۔ نازی جرمنی کے سربراہ ہٹلر کی فوج نے 22 جون 1941ء کو یوکرین، بیلاروس اور روس پر اچانک حملہ کر دیا تھا۔ روس میں اس دن یومِ سوگ منا کر متاثرین کو یاد کیا جاتا ہے۔

اخبار ماسکو ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق اس جنگ میں تقریباً دو کروڑ 70 لاکھ سوویت فوجی اور عام شہری مارے گئے تھے۔ ان کی یاد میں روسی مسلح افواج نے ماسکو کے سب سے بڑے گرجا گھر میں دعائیہ تقریبات کا انعقاد کیا۔ گرجا گھر کے باہر 1418 موم بتیاں بھی روشن کی گئیں جو اتنے ہی روز تک چلنے والی جنگ کی علامت تھی۔

یوکرین کے مقبوضہ ساحلی شہر ماریوپول میں روس نواز کارکنوں نے 10 ہزار موم بتیوں کے ذریعے 22.06.1941 لکھا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں