بریکنگ نیوز
بارش کے بعد مرتضیٰ وہاب کا رات گئے شہر کا دورہ پولیس کی مبینہ ملی بھگت سے شہر میں غنڈہ گردی میں اضافہ امریکہ، فائرنگ کے واقعات نہ تھم سکے، آزادی پریڈ میں فائرنگ سے 6 افراد ہلاک شاہدرہ؛ گلشن حیات پارک میں قتل کی واردات، ملزمان موقع سے فرار آئی جی پنجاب کی جانب سے پابندی کے باوجود پولیس ٹک ٹاک بنانے میں مصروف حیدرآباد؛ شہر کے مختلف علاقوں میں بارش کے بعد اب تک بجلی بحال نا ہو سکی امریکہ، فائرنگ کے واقعات نہ تھم سکے، آزادی پریڈ میں فائرنگ سے 6 افراد ہلاک اٹلی، برفانی تودہ گرنے سے 6 افراد ہلاک، متعدد زخمی عوام میں کورونا سے متعلق مزید شعور بیدار کرنے کی ضرورت ہے، وزیر صحت پیوٹن کا امریکہ کو یومِ آزادی پر مبارکباد نہ دینے کا فیصلہ پنجاب کی ترقی کے دشمن کا نام عمران خان ہے، مریم نواز عازمینِ حج کے لیے دنیا کا سب سے بڑا کولنگ سسٹم نصب کردیا گیا سعودی عرب، غلاف کعبہ یکم محرم کو تبدیل کرنے کا فیصلہ سعودی عرب، غلاف کعبہ یکم محرم کو تبدیل کرنے کا فیصلہ ایندھن کی عدم دستیابی کے سبب سری لنکا میں ایک بار پھر اسکولز بند لوٹوں کی چیف پولنگ ایجنٹ مریم صفدر کا پورا زور بیہودگی پر لگ رہا ہے، فواد چوہدری ازبکستان، خود مختار صوبے میں ہنگامے پھوٹ پڑے، 18 افراد ہلاک عازمینِ حج کے لیے دنیا کا سب سے بڑا کولنگ سسٹم نصب کردیا گیا موسمیاتی تبدیلیاں نئی وباؤں کا پیش خیمہ ثابت ہوسکتی ہیں، سائنسدانوں کا انتباہ بارش کی پہلی بوند گرتے ہی شہر اندھیرے میں ڈوب گیا ’بجلی کے ریٹس بہت زیادہ ہیں اور گیس کی قلت کا بھی سامنا ہے‘ ’’دعا زہرہ کے بیانات غلط ثابت ہوئے اور یہ کیس اغوا کے ضمرے میں آتا ہے‘ صوبائی وزیر صحت کی واسا ہیڈ آفس آمد، واٹر سپلائی کے ترقیاتی منصوبوں پر تبادلہ خیال نیب میں تقرری و تبادلے منسوخ کرنے کی ہدایات جاری وزیراعلیٰ بلوچستان کا صوبے کے دیگر علاقوں میں طوفانی بارش سے پیدا صورتحال کا جائزہ

افغانستان زلزلہ، ملبے تلے دبے افراد کو نکالنے کیلیے امدادی کارروائیاں جاری

افغانستان میں بدھ کو آنے والے زلزلے کے بعد امدادی کارروائیاں جاری ہیں۔ بارش کے سبب امدادی کارکنوں کو مشکلات کا سامنا ہے۔ لوگ تاحال ملبے تلے دبے ہوئے ہیں۔

زلزلہ زدہ علاقے پہلے ہی طوفانی بارشوں سے متاثر تھے جن کی وجہ سے پہاڑی چٹانیں اور مٹی کے تودے گرے جو اب امدادی سرگرمیوں میں رکاوٹ کا باعث ہیں۔ امدادی کارکن متاثرہ علاقوں میں ہیلی کاپٹر کے ذریعے پہنچے۔

حکام کے مطابق پاکستان کی سرحد کے ساتھ واقع پکتیکا صوبے میں سب سے زیادہ نقصان ہوا جہاں کم از کم ایک ہزار افراد مارے گئے۔ پکتیکا صوبے میں محکمہ اطلاعات اور ثقافت کے سربراہ محمد امین حذیفہ نے صحافیوں کو بتایا کہ بڑی تعداد میں جاں بحق ہوئے افراد کی تدفین کا سلسلہ جاری ہے۔ زخمیوں کی تعداد ڈیڑھ ہزار سے زائد ہے جن میں سے اکثر کی حالت نازک ہے۔ لوگ تاحال ملبے تلے دبے ہوئے ہیں۔

بدھ کو آنے والے تباہ کن زلزلے میں جاں بحق افراد کی تعداد بتدریج بڑھتی رہی کیونکہ دور دراز پہاڑی علاقوں تک رسائی کافی مشکل تھی۔ طالبان کے سپریم لیڈر ملا ہیبت اللہ اخوندزادہ نے خبردار کیا تھا کہ یہ تعداد مزید بڑھ سکتی ہے۔

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریس کا کہنا ہے کہ عالمی ایجنسی مدد کے لیے پوری طرح فعال ہے۔ زلزلہ زدہ علاقے میں طبی امداد کی ٹیمیں تعینات کر دی گئی ہیں جبکہ ادویات، خوراک، ٹراما کٹس فراہم کی جا رہی ہیں۔ ان کے علاوہ ہنگامی شیلٹر بھی بنایا گیا ہے۔

ہمسایہ ملک پاکستان نے افغانستان کے زلزلہ متاثرین کے لیے امداد روانہ کی ہے۔ پاکستان کے این ڈی ایم اے نے ایک بیان میں کہا ہے کہ انہوں نے سات ٹرکوں میں خیمے، کمبل اور ادویات روانہ کی ہیں۔ ایران اور بھارت نے بھی افغانستان کے زلزلہ متاثرین کے لیے امداد بھیجنے کے اعلانات کیے ہیں۔

واضح رہے کہ افغانستان میں منگل اور بدھ کی درمیانی شب آنے والے زلزلے کی شدت 6.1 تھی۔ زلزلے کے جھٹکے پاکستان میں بھی محسوس کیے گئے تھے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں